rinjishay


نجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لئے آr
رنجش ہی سہی
آ پھر سے مجھے چھوڑ کے جانے کے لئے آ
رنجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لئے آ
رنجش ہی سہی
پہلے سے مراسم نہ سہی پھر بھی کبھی تو
پہلے سے مراسم نہ سہی پھر بھی کبھی تو
رسم و رہِ دنیا ہی نبھانے کے لئے آ
رنجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لئے آ
رنجش ہی سہی
کس کس کو بتائیں گے جدائی کا سبب ہم
کس کس کو بتائیں گے جدائی کا سبب ہم
تو مجھ سے خفا ہے تو زمانے کے لئے آ
رنجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لئے آ
رنجش ہی سہ

Poem Rating:
Click To Rate This Poem!

Continue Rating Poems


Share This Poem